میرا کمرا:اسامہ سومرو

میرے کالے کمرے میں کچھ روشن نہیں۔
یے اندھیر نگری ہے۔
یہاں میرے علاوہ اور بھی کئیں آسیب بستے ہیں۔
اس کمرے کہ سناٹے میں بڑی سچائیاں ہیں۔
یے اندھیروں کی قربت میں رہتا یے،
کبھی جھوٹ نہیں بولتا مجھ سے۔
میں جیسا ہوں ویسا ہی بتاتا ہے مجھے۔
اس کمرے کی خاصیت یے ہے کہ میری خوشی میں بھی یے ساتھ رہتا ہے اور دکھ میں بھی۔
کیا ایسی کوئی چیز ہے جو اتنی سچی ہو؟ کہ دل کی دھڑکن بھی بغیر کسی ردوبدل کہ سنائی سکے۔
اسی کمرے میں ایک آئینا بھی ہے جس کی سنگت کمرے سے اّوّل درجے کی ہے ِِشِیشا سچائی کا پیمانہ بتا دیتا ہے مجھے چونکہ یے تھوڑا سا میلا ہے میلے کمرے کی طرح۔
پّر کّشِشِ اتنی ہی ہےاس میں۔
جتنی کسی محل میں رکھے شیشے کی ہوتی ہے۔
صاف ذرا کم ہی کرتا ہوں میں۔
بھلا اندھیرے میں پڑے اس شیشے کو صاف کرنے کی کیا ضرورت۔ جو صاف اور میلا ویسا کا ویسا دکھے۔
اس بات پر اقبال کا بڑا مشہور شعر یاد آگیا کہ “دھول چھیہرے پر تھی اور آئینا صاف کرتی رہے”۔
آئینے میں پیچھے ایک جگا بڑی گندی دکھائی دیتی ہے سخت نفرت کہ ساتھ ساتھ محبت بھی کرتا ہوں اس سے۔
اور وہ جگہ ہے جالوں کی آگوش میں رکھا ایک بیڈ۔
جہاں خواہشوں کی نیند سر رکھ کر سو تھی ہوتی ہے۔
اس بیڈ پر میں ذرا کم ہی سوتا ہوں کیونکہ وہاں میرے کتابیں بخری ہوئی ہوتی ہیں۔
میرے ساتھ کئیں مسائل ہیں اگر کمرا صاف کرنے لگوں تو چیزیں ملنا بند ہوجاتی ہیں۔
کبھی اداس ہوتا ہوں تو مسنوی رومی، اور شاھ لطیف کو پڑھتا ہوں۔
لیکن صفائی کہ بعد وہ بھی نہیں ملتی۔
پھر کئی دنوں کی منتظر کچھ نئیں کتابیں خوشی سے جھوم اٹھتی ہیں کہ اب انکی باری آگئی ان کو بھی پڑھا جائے گا۔
یہاں ہر جگہ ہر پل ہر ذکر کیا جاتا ہے۔ لیکن کبھی کسی کی یاد نہیں آتی۔
پھر بھی یادوں کی یاد میں اکثر دیئا جلایا کرتا ہوں۔ لیکن تیرے یادوں کی ہوائیں بجھادیتی ہیں چمن میں چلتی اس شمع کو۔
یے ایسا دلکش کمرا ہے کہ جہاں اندھیرے کہ سوا کچھ نہیں بستا۔
جس طرح کالی رات میں کچھ جگنوں راہ کو بھٹک تے ہیں ٹھیک ویسے ہی
میں بھی اس کمرے میں لڑکھڑا کر گر پڑھتا ہوں کسی
کونے میں۔
پتا نہیں کیسے رہ لیتا ہوں میں۔
ایسے گندے کمرے میں۔
لیکن اس کہ سوا کوئی میرا دوست بھی تو نہیں جو مجھے میری سچائی بتا سکے، سنا سکے، محسوس کرا سکے۔
منتظر یہاں کئی مایوس ہیں۔
اتنا پراسرار ہے میرا کمرا۔
یادوں کا کفس ہے میرا کمرا۔۔۔۔۔۔۔!

Published by Usama Soomro

Social activist|Progressive|Writer|Blogger|Humanist|Cultural Critic| and Researcher.

Leave a comment

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

Create your website at WordPress.com
Get started
%d bloggers like this: